شمسي باشا

من ويكيبيديا، الموسوعة الحرة
اذهب إلى التنقل اذهب إلى البحث
شمسي باشا
(بالتركية: Şemsi Ahmed Paşa)‏  تعديل قيمة خاصية (P1559) في ويكي بيانات
Semsi Pasa - Incipit Page with Illuminated Titlepiece - Walters W66529B - Full Page.jpg
 

مناصب
الصدر الأعظم   تعديل قيمة خاصية (P39) في ويكي بيانات
تولى المنصب
12 أكتوبر 1579 
معلومات شخصية
اسم الولادة (بالتركية: KizilAhmedli Ahmed Paşa)‏  تعديل قيمة خاصية (P1477) في ويكي بيانات
الميلاد سنة 1492  تعديل قيمة خاصية (P569) في ويكي بيانات
بولو,تركيا  تعديل قيمة خاصية (P19) في ويكي بيانات
الوفاة 28 أبريل 1580 (87–88 سنة)  تعديل قيمة خاصية (P570) في ويكي بيانات
القسطنطينية  تعديل قيمة خاصية (P20) في ويكي بيانات
مكان الدفن مقبرة الشهداء في أدرنة قابي  [لغات أخرى]  تعديل قيمة خاصية (P119) في ويكي بيانات
مواطنة Flag of the Ottoman Empire (1844–1922).svg الدولة العثمانية  تعديل قيمة خاصية (P27) في ويكي بيانات
نشأ في بولو,تركيا  تعديل قيمة خاصية (P66) في ويكي بيانات
الحياة العملية
المهنة سياسي  تعديل قيمة خاصية (P106) في ويكي بيانات
صورة للصدر الأعظم شمسي باشا
صورة قديمة لمسجد شمسي احمد باشا

شمسي أحمد باشا المعروف أيضا باسم شمسي باشا، (1592 – 28 نيسان / أبريل 1580) تبوأ منصب الصدر الأعظم في عام 1579 تحت خدمة السلطان مراد الثالث وهو من ذو اصول ألبانية [1][2] .

حياته[عدل]

يصل نسبه من جهة الاب إلى خالد بن الوليد .[3] أمه ابنة السلطان بيازيد الثاني عائشة هوماشاه بنت رستم باشا من زوجته السلطانة مهرماه .[4]

في عهده كصدر اعظم امر المعمار سنان ببناء جامع بالقرب من مقر اقامته على ضفافالبوسفورجامع شمسي باشا هو واحد من أصغر المساجد التي شيدت من قبل صدر أعظم، ومع ذلك فهو واحد من أكثر المساجد شهرة في المدينة، وذلك بسبب المزيج بين مساحته الصغيرة وموقعه على الواجهة البحرية. يذكر أنه مثال كبير على مهارة المعمار سنان في مزج الهندسة المعمارية مع المناظر الطبيعية..[5]

خلال توليه منصب الحاكم العام لروميليا، أفيد أنه غادر عاصمة الولاية صوفيا في عام 1565 مع موكب مهيب لدرجة ان اهالي اسطنبول لم يشاهدو مثل هذا الموكب لوالي برتبة بكلربك من عظمة وبذخ .

انظر أيضا[عدل]

المراجع[عدل]

  1. ^ Kim Mehmeti. Fara e bimes se keqe. صفحة 64. Shemsi Ahmet Pasha ishte me origjinë shqiptare. U lind në vitin 1492. Del të jetë i shënuar si shqiptar nga i ati, jo na nëna. Qysh në moshë të re, pasi i kishte kryer me sukses mësimet ishte emëruar nëpunës në Oborrin e Sulltan Sylejmanit të Madhërishëm. Ai, në periudha të ndryshme kohore ka shërbyer si guvernator osman në Damasku, Sivash, Anadoll dhe në viset e Rumelisë. الوسيط |CitationClass= تم تجاهله (مساعدة)
  2. ^ Danişmend (1971), p. 25. (بالتركية)
  3. ^ Kim Mehmeti. Fara e bimes se keqe. صفحة 64. Nëna e Shemsi Ahmed Pashait, thuhet se ishte me origjinë familjare një pasardhës i drejtpërdrejtë i Halid Ibni Velidit, komandantit të famshëm të ushtrisë islame, i cili pushtoi Sirinë në kohën e profetit Muhamed, në shekullin e 7-të. الوسيط |CitationClass= تم تجاهله (مساعدة)
  4. ^ Kim Mehmeti. Fara e bimes se keqe. صفحة 65. Nëna e tij, Aishe Humashah, ishte mbesa e Sulltan Sylejmanit. الوسيط |CitationClass= تم تجاهله (مساعدة)
  5. ^ Jorgji Kote. Diplomacia per te gjithe. صفحة 24. Në kohën kur ishte emëruar pranë Vezirir të Madh, Sokolloviq, kishte ngritur Pallatin Topkapi. Ai kishte urdhëruar arkitektin më të njohur të kohës, ( Leonardo Da Vinçin) e Lindjes, mjeshtrin me origjinë shqiptare, Mimar Sinan, që të ndërtonte një xhami në Kompleksin bregdetar të Bosforit, në Konstandinopojë. Xhamia e Shemsi Pashës është njëra ndër xhamitë më të vogla që është porositur nga veziri i madh, por kjo është një nga xhamitë më të njohura në qytet, për shkak të një kombinimi të dimensioneve të saj në miniaturë dhe vendndodhjen e saj ujore. Kjo xhami unikate është përmendur si një karakteristikë krejt e veçantë e mjeshtrit të përkryer të kohës, Mimar Sinan. Ai me gjenialitetin e tij krijues e ndërtues, kishte arritur të lidhte organikisht një përzierje të arkitekturës me peizazhin natyror. الوسيط |CitationClass= تم تجاهله (مساعدة)

مصادر[عدل]

  • Kuran, Aptullah. 1986. معمار سنان. اسطنبول: حريت Vakıf Yayınları، ص. 193-196.
  • غولتكين، Gülbin. 1994. "Semsi باشا Külliyesi." في Dünden Bugüne اسطنبول Ansiklopedisi. اسطنبول: بين Vakfi، السابع، p. 158-159.
  • Necipoglu, Gülru. 2005. عمر سنان: الثقافة المعمارية في الإمبراطورية العثمانية. لندن: رياكشن بوكس، ص. 452-498.
Crystal personal.svg
هذه بذرة مقالة عن شخصية سياسية بحاجة للتوسيع. شارك في تحريرها.